فلائی ناس كى بین الاقوامی وسعت پاکستان تک

ریاض – 11 فروری فلائى ناس نے 15 فروری 2018 سے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان نئی پروازوں کو شروع كرنےکا اعلان کیا ہے۔   سعودى عرب اور پاکستان کے درمیان علاقائی رابطوں کو بهتر بنانے كے سلسلے میں  فلائی ناس نے نئی منزلوں تک  پروازوں کے آغاز کر نے كا فيصله كيا ہے۔ (Logo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20161004/414891LOGO ) […]

ریاض – 11 فروری

فلائى ناس نے 15 فروری 2018 سے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان نئی پروازوں کو شروع كرنےکا اعلان کیا ہے۔   سعودى عرب اور پاکستان کے درمیان علاقائی رابطوں کو بهتر بنانے كے سلسلے میں  فلائی ناس نے نئی منزلوں تک  پروازوں کے آغاز کر نے كا فيصله كيا ہے۔

(Logo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20161004/414891LOGO )

ان پروازوں کے لئے جدید اور یکتا سہولیات سے مزین ایربس 320 اور بوینگ 767    طیارےاستعمال کئے جائیں گے۔ بکنگ کے لئے بکنگ ایجنٹ کے علاوہ سمارٹ فون اور فلائی ناس کی ویب سائٹ کی سہولت بھی دستیاب ہو گی –

فلائی ناس مندرجہ بالا پروازوں کے علاوہ  زائیرین حج و عمرہ کے لئے  بھی خصوصی کشش رکھتا ہے – فلائى ناس  کام یا حج اور عمرہ کے لئے سعودی عرب کے مسافروں کی خدمت کرتی ہے، اور یہ مسافروں کے لئے مزید سہولیات فراہم کرے گی تا کہ بہت آسانی سے سعودی عرب کے مختلف علاقوں تک پہنچ سكيں- مزید براں اندرون ملک (سعودى عرب) کے مختلف 17 شہروں تک فوری  رسائی کے لئے فلائی ناس کی مزيد پروازیں بهى دستیاب ہوں گی ۔

اپنے بین الاقوامی توسیعی منصوبے  کے سلسلہ میں فلائی ناس کے چیف ایگزیکیٹو آفیسر بندر المهنا ا پنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے فرماتے ہیں “ہم اپنے معزز مسافروں کی ضروریات   کے مطابق اپنے دائرہ کار کو بڑھاتے رہیں گے،حالیاً ہم ایشیا اور افریقہ میں نئی منزلوں کو پانے کے عمل سے گذر رہے ہیں-  2017 میں ہم  کانو ،  نائیجیریا تک رسائی حاصل کر چُکے ہیں  اور 2018 میں پاکستان ، انڈیا اور الجیریا کے مختلف شہروں تک پہنچیں  گے”

ہمارا عہد ہے که سال  2018 همارى بین الاقوامى وسعتوں اور  نئی منزلوں  کے حصول کا سال ثابت ہو گا،  ہم یہ بھی وعدہ کرتے ہیں کے فلائی ناس نے گذشتہ 10 سال میں جو معیارقائم کيا ہے اسے برقرار رکھا جائے گا۔

فلائی ناس مندرجہ ذیل پروازوں کا آغاز کر رہا ہے :

15 فروری 2018 سے  ریاض – لاہور اور  ریاض – اسلام آباد

15 فروری 2018 سے  دمام – لاہور

17 فروری 2018 سے  جدہ –لاہور

فلائى ناس کے بارے میں:

فلائى ناس ایک سعودی قومی ایئر لائن ہے، جس میں 30 ائربس A320 طیارے کے بیڑے كو دو كلاسوں کے ساتھ ڈیزائن کیا گیا ہے: بزنس کلاس اور اكانومى کلاس-  اور ہفتے ميں 1000 سے زيادہ پروازيں مملكت  کے اندر مختلف  17 شهروں اور 17 بين الاقوامی منزلوں تک  جاتى هيں ۔ 2007 ء میں فلائى ناس کے آغاز سے، فلائى ناس نے 32 کروڑ سے زائد مسافروں كى ریاض، جدہ، دمام اور ابہا کے اہم ہوائی اڈوں سے کامیابی سے خدمت کی ہے۔
فلائى ناس بہترین قیمتوں پر بہترین خدمات فراہم کرنے کى خواہاں ہے اور اس كى  سپر کسٹمر سروس کے نتیجے میں فلائى ناس نے مسلسل تين سالوں 2015، 2016 اور 2017 کے لئے مشرق وسطی میں بہترین کم قیمت ایئر لائن کا  ورلڈ ٹریول ایوارڈز كا اعزاز حاصل کیا ہے اور  2017  سکائى ٹریکس “Skytrax” کا ایوارڈ بھی حاصل کيا۔

مزید معلومات کے لئے،  فلائى ناس ویب سائٹ پر جائیں:

 www.flynas.com

flynas Expands Its International Reach to Pakistan

RIYADH, Saudi Arabia, February 12, 2018/PRNewswire/ –In its ongoing plans to expand its reach in Asia and open new strategic and international routes, flynas, announces its new flights between the kingdom and Pakistan starting February 15th  2018. (Logo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20161004/414891LOGO ) flynas will launch flights from Dammam, Riyadh and Jeddah to both Lahore and Islamabad and will commence […]

RIYADH, Saudi Arabia, February 12, 2018/PRNewswire/ –In its ongoing plans to expand its reach in Asia and open new strategic and international routes, flynas, announces its new flights between the kingdom and Pakistan starting February 15th  2018.

(Logo: http://photos.prnewswire.com/prnh/20161004/414891LOGO )

flynas will launch flights from Dammam, Riyadh and Jeddah to both Lahore and Islamabad and will commence on the 15th of February with flights from Riyadh to Lahore. Riyadh to Islamabad flights will follow on the 16th of February, along with flights from Dammam to Lahore. While flights from Jeddah to Lahore will launch on the 17th of February.

flynas flights between the Kingdom and Pakistan will utilize A320 fleet, and new B767 aircraft. Booking can be made through flynas’ smartphone application, travel agents, and the flynas website.

These new flynas routes will serve business travelers from and to Saudi Arabia, as well as Hajj and Umrah visitors. It will also connect passengers to many different cities within the Kingdom with flynas’ network, which includes 17 domestic destinations.

Commenting on the ongoing expansion, flynas CEO Bander Al-Mohanna said: “Ever since flynas was established over10 years ago, we have been continuously finding new opportunities and reaching new destinations, in order to deliver the best services and connectivity to our dear guests.

“We continue our journey with consumers, promising 2018 to be the year of expansion, to cater to their needs and aspirations to reach further domestic and international destinations.”

About Flynas 

flynas is a Saudi-national airlines, with a fleet of 31 airbus A320 that consists of two classes: business and economy, and operates more than 1000 weekly flights. flynas offers flights to 17 domestic destinations and 53 international destinations. Since its establishment in 2007, flynas has offered its services to more than 32 million passengers, whom have been successfully transported from hub-airports in Riyadh, Jeddah, Dammam and Abha. flynas is committed to its stellar on time performance and customer services, which led to it winning the best low-cost airline in the region at the World Travel Awards for three consecutive years (2015, 2016, 2017), as well as winning Skytrax for 2017.

For more information, please visit the website http://www.flynas.com

Source: flynas

ایپکس شپنگ نے سی آر آئی گروپ کی اینٹی-برائبری مینجمنٹ سرٹیفکیشن کے لیے عمل کاآغاز کردیا

اخلاقی اقدار پرکھڑا دبئی میں قائم لاجسٹکس ادارہ آئی ایس او 37001:2016 اے بی ایم ایس معیار پر درج ہوتا ہوا لندن، 9 فروری 2018ء/پی آرنیوزوائر/– کارپوریٹ ریسرچ اینڈانوسٹی گیشنز پرائیوٹ لمیٹڈ (سی آر آئی گروپ) نےآج اعلان کیا ہے کہ دبئی، متحدہ عرب امارات میں قائم ایپکس شپنگ سروسز ایل ایل سی نے آئی […]

اخلاقی اقدار پرکھڑا دبئی میں قائم لاجسٹکس ادارہ آئی ایس او 37001:2016 اے بی ایم ایس معیار پر درج ہوتا ہوا

لندن، 9 فروری 2018ء/پی آرنیوزوائر/– کارپوریٹ ریسرچ اینڈانوسٹی گیشنز پرائیوٹ لمیٹڈ (سی آر آئی گروپ) نےآج اعلان کیا ہے کہ دبئی، متحدہ عرب امارات میں قائم ایپکس شپنگ سروسز ایل ایل سی نے آئی ایس او 37001 اینٹی -برائبری مینجمنٹ سسٹم اسٹینڈرڈ سرٹیفکیشن حاصل کرنے کے لیے سی آر آئی سرٹیفکیشن سروسز سے معاہدہ کرلیا ہے۔https://prnewswire2-a.akamaihd.net/p/1893751/sp/189375100/thumbnail/entry_id/0_2as0f0d4/def_height/400/def_width/400/version/100012/type/1

https://mma.prnewswire.com/media/431851/Corporate_Research_and_Investigations_Logo.jpg

اپنے اسٹیک ہولڈرز کے لیے پیغام میں ایپکس شپنگ نے کہا ہےکہ سرٹیفکیشن ادارے کو “اپنے انسداد-رشوت ستانی اور انسداد-بدعنوانی پروگرام کے نفاذ” میں سہولت دے گی اور “میری ٹائم اینٹی-کرپشن نیٹ ورک (ایم اے سی این) میں ایپکس شپنگ سروسز ایل ایل سی کی متحرک انداز میں شرکت کے لیے اہلیت کے معیار کو بھی بہتر بنائے گی۔”

لندن میں قائم سی آر آئی گروپ دیانت میں مطلوبہ احتیاط، ملازمت میں پس منظر کی جانچ، تھرڈ پارٹی خطرے کے انتظام اور تکمیل اور دیگر پیشہ ورانہ تفتیشی تحقیقی خدمات پیش کرنے والا عالمی ادارہ ہے۔ 2016ء میں ادارے نے 3پی آر ایم-سرٹیفائیڈ اور 3پی آر ایم-کوالیفائیڈ سمیت پروگراموں میں سی آر آئی سرٹیفکیشن اور ماہرین کی تربیت فراہم کرنے کے لیے اپنا اینٹی-برائبری اینڈ اینٹی کرپشن سینٹر فار ایکسی لینس (ABAC®CoE) جاری کیا۔

ظفر انجم، گروپ چیف ایگزیکٹو آفیسر سی آر آئی گروپ نے کہا کہ “ہماری نظریں ایپکس شپنگ کے ساتھ کام کرنے پر مرکوز ہیں اور ہم آئی ایس او 37001:2016 کے ذریعے انہیں اپنےاہداف حاصل کرنے میں مدد دینے سے وابستہ ہیں، ایسے معیارات جو دنیا بھر میں  160 سے زیادہ ممالک میں تسلیم اور استعمال کیے جاتے ہیں۔

آئی ایس او 37001:2016 سرٹیفکیشن

حال ہی میں قائم کردہ آئی ایس او 37001 معیار انسداد رشوت ستانی کے انتظام کا نظام لاگو کرنے میں مدد دینے کے لیے تیار کیا گیا ہے جو عالمی اداروں کو مختلف اقدامات کے سلسلے کی صراحت فراہم کرتا ہے جو کسی ادارے کو رشوت ستانی سے تحفظ، سراغ اور نمٹنے کے لیے درکار ہوتے ہیں ۔

سی آرآئی سرٹیفکیشن کے آڈیٹرز اور تجزیہ کاروں نے ایسے اقدامات تیار کیے جو موجودہ انتظامی عمل اور ضابطوں میں شامل ہوتے ہیں، بشمول ایک انسداد-رشوت ستانی پالیسی، جن میں تکمیل احکامات کی تربیت، تمام عملے کو پالیسی اور پروگرام کی اطلاع ، خطرے کا جائزہ فراہم کرنے، مطلوبہ احتیاط کا اہتمام، داخلی ضابطوں کا نفاذ اور اطلاع دینے اور تفتیش کرنے کے عمل کی تیاری فراہم کرنا شامل ہے۔

ایک بیان میں ایپکس شپنگ کے مالکان نے کہا کہ “سی آر آئی گروپ کارپوریٹ سچائی کے شعبے میں صف اول کا ادارہ ہے اوران کی سرٹیفکیشن ایپکس شپنگ کو کاروباری اخلاقیات کی راہ میں مہر تصدیق فراہم کرتی ہے۔”

سی آر آئی گروپ کے بارے میں

گزشتہ 28 سالوں میں سی آر آئی گروپ ادارہ جاتی تفتیش اور خطرات سے نمٹنے میں ایک عالمی رہنما کی حیثیت سے ابھراہے، جو چھ براعظموں میں نامور صارفین کے لیے خدمات فراہم کر رہا  ہے۔ سی آر آئی گروپ قانونی تکمیل، مالیاتی نتیجہ خیزی اور بیرونی شراکت داروں، رسد کنندگان اور کسی انجمن سے منسلک ہونے کے خواہشمند صارفین کے لیے تکمیل کی سطحیں قائم کرکے کاروباروں کو تحفظ دیتا ہے۔

رابطہ سی آر آئی گروپ:
انیل سوناگر
مارکیٹنگ مینیجر
کارپوریٹ ریسرچ اینڈ انوسٹی گیشنز پرائیوٹ لمیٹڈ
917-918، لبرٹی ہاؤس، ڈی آئی ایف سی، دبئی، متحدہ عرب امارات
ٹیلی فون: 3589884 4 971+| ٹیلی فون: 521042433 971+
www.CRICertification.com

لوگو – https://mma.prnewswire.com/media/431851/Corporate_Research_and_Investigations_Logo.jpg

Apex Shipping Begins Process for CRI Group’s Anti-Bribery Management Certification

Founded on ethical values, Dubai-based logistics firm enrolls in ISO 37001:2016 ABMS standard LONDON, Feb. 9, 2018 /PRNewswire/ — Corporate Research and Investigations Pvt. Ltd. (CRI Group) announced today that Apex Shipping Services LLC, based in Dubai, UAE, has engaged its CRI Certification services to achieve the ISO 37001 Anti-Bribery Management System Standard certification. In a […]

Founded on ethical values, Dubai-based logistics firm enrolls in ISO 37001:2016 ABMS standard

LONDON, Feb. 9, 2018 /PRNewswire/ — Corporate Research and Investigations Pvt. Ltd. (CRI Group) announced today that Apex Shipping Services LLC, based in Dubai, UAE, has engaged its CRI Certification services to achieve the ISO 37001 Anti-Bribery Management System Standard certification.

Building Trust. Promoting Compliance.

In a message to its stakeholders, Apex Shipping said the certification will allow the company to “implement our Anti-Bribery and Anti-Corruption program” and “will also enhance the eligibility criteria for Apex Shipping Services LLC to participate in Maritime Anti-Corruption Network (MACN) actively.”

London-based CRI Group is a global provider of Integrity Due Diligence, Employment Background Screening, Third-Party Risk Management and Compliance and Other Professional Investigative Research services. In 2016, the company launched its Anti-Bribery and Anti-Corruption Centre of Excellence (ABAC® CoE) to offer CRI Certification and expert training in programs including 3PRM-Certified™ and 3PRM-Qualified™.

Zafar Anjum, CRI Group’s CEO, said: “We look forward to working with Apex Shipping and we stand committed to helping them achieve their goals through ISO 37001:2016 certification, with standards that are recognized and practiced in more than 160 countries worldwide.”

ISO 37001:2016 Certification

The ISO 37001 standard helps global organizations implement an anti-bribery management system by specifying a series of measures required by the organization to prevent, detect and address bribery.

CRI Certification’s auditors and analysts develop measures that integrate with existing management processes and controls, including implementing an anti-bribery policy, providing compliance training, communicating the policy and program to all personnel, providing risk assessments, conducting due diligence, implementing internal controls and developing reporting and investigation procedures.

In its statement, Apex Shipping ownership said: “CRI Group is a frontrunner in the field of corporate integrity, and their certification gives Apex Shipping an official seal of approval in the way of business ethics.”

ABOUT CRI GROUP

Over the past 28 years, CRI Group has emerged as a global leader in corporate investigations and risk management, serving distinguished clients across six continents. CRI Group safeguards businesses by establishing the legal compliance, financial viability, and integrity levels of outside partners, suppliers and customers seeking to affiliate with an organization.

CONTACT CRI GROUP

Anil Sunagar
Marketing Manager
Corporate Research and Investigations Pvt. Ltd.
917-918, Liberty House, DIFC, Dubai, UAE
T: +971 4 3589884 | T: +971 521042433
www.CRICertification.com

Logo – https://mma.prnewswire.com/media/431851/Corporate_Research_and_Investigations_Logo.jpg

فیچر: چین کا ہائنان دنیا بھر کے سیاحوں کو دعوت دیتا ہے اپنے ساحلوں سے کہیں آگے

بیجنگ، چین، 4 فروری 2018ء/سنہوا-ایشیانیٹ/– روس سے تعلق رکھنے والی یانا ژوراولیوا چین کے جنوبی کنارے پر واقع جزیرے ہائنان میں رہنے کی اتنی عادی ہو گئی ہیں کہ وہ ساتھ رہنے کے لیے اپنی والدہ اور نانی کو بھی لانے کے منصوبے بنا رہی ہیں۔ ژوراولیوا کا کہنا ہے کہ “یہاں زندگی آرام دہ […]

بیجنگ، چین، 4 فروری 2018ء/سنہوا-ایشیانیٹ/– روس سے تعلق رکھنے والی یانا ژوراولیوا چین کے جنوبی کنارے پر واقع جزیرے ہائنان میں رہنے کی اتنی عادی ہو گئی ہیں کہ وہ ساتھ رہنے کے لیے اپنی والدہ اور نانی کو بھی لانے کے منصوبے بنا رہی ہیں۔

ژوراولیوا کا کہنا ہے کہ “یہاں زندگی آرام دہ ہے۔ ماحول اچھا ہے اور کام کے کئی مواقع ہیں۔”

پہلی بار 2005ء میں ہائنان آنے والی ژوراولیوا ایک ٹریول ایجنسی میں کام کرتی ہیں۔ طبی علاج کے لیے ہائنان آنے والے روسی سیاحوں کی تعداد میں اضافے کی بدولت ژوراولیوا نے دو سال قبل ایک چینی طبی ہسپتال میں کام کرنے کے لیے اپنی ملازمت تبدیل کی، جس نے گزشتہ سال لگ بھگ 1,000 روسی طبی سیاحوں کو خدمات پیش کی تھیں۔

ژوراولیوا نے کہا کہ ان کا سب سے بڑا خواب ہے کہ وہ اتنے پیسے کمالیں کہ ہائنان کے ساحلی تفریحی شہر سانیا میں ایک چھوٹا سا گھر خرید سکیں۔

ژوراولیوا جیسے کئی غیر ملکی ہائنان آ چکے ہیں اور اس منطقہ حارہ کے جزیرے سے محبت میں گرفتار ہو چکے ہیں، محض گرم موسم، دھوپ اور ساحلوں کا لطف اٹھانے کے لیے ہی نہیں، بلکہ اپنے خوابوں کی تعبیر کے لیے بھی۔

عالمی معیار کا سیاحتی مقام

ہائنان عالمی معیار کا سیاحتی مقام بننے  کی اپنی منزل کی جانب زبردست پیشرفت کر رہا ہے۔ اس نے 2020ء میں 1.3 ملین سے زیادہ غیر ملکی سیاحوں کی آمد کا ہدف مقرر کر رکھا ہے۔

“روسی سیاح جزیرے پر آنا پسند کرتے ہیں، صرف اس لیے نہیں کہ یہ نسبتاً قریب ہے، بلکہ مکمل سفری تجربے کا لطف اٹھانے کے لیے بھی کہ جس میں تفریح، ثقافتی سرگرمیاں اور طبی دیکھ بھال تک شامل ہیں۔” آندرے دینی سوف، روسی سفیر برائے چین نے کہا۔

ہائنان سفری پیکیجز کی وسیع اقسام پیش کرتا ہے جن میں سیر سپاٹے، ساحل، مقامی رسوم و رواج، منطقہ حارہ کے برساتی جنگلات، کھیل اور صحت کی دیکھ بھال شامل ہیں۔

دینی سوف کے مطابق 280,000 سے زیادہ روسی سیاح گزشتہ سال ہائنان گئے، جو ایک سال قبل پچھلے سال کے مقابلے میں دو گنا اضافہ تھا۔

انہوں نے کہا کہ ” ہائنان کے لیے تمام غیر ملکی سیاحوں کی تعداد میں روسی سیاحوں کی تعداد کو 50 فیصد تک پہنچاتے ہوئےہمیں سیاحتی تعاون مزید مضبوط ہونے کی امید ہے۔”

درحقیقت، 2017ء میں ہائنان میں غیر ملکی سیاحوں کی تعداد 1.1 تک بڑھی، جو مقامی حکام کے اعداد و شمار کے مطابق سال بہ سال میں تقریباً 50 فیصد اضافہ ہے۔

رواں سال جزیرے کو ایک درجہ اول کا مقام بنانے کے لیے تین سالہ منصوبہ شروع کیا جائے گا، جس کی ترجیحی پالیسیاں ہیں ویزا-فری سروسز، ٹکٹ پروموشنز اور سروس اپگریڈز وغیرہ۔

بڑی تبدیلیاں

چین کے لیے ناروے کے سفیر گیر او پیڈرسن، جنہوں نے 1988ء میں صوبے کا دورہ کیا تھا، کہا کہ “میری نظریں ہائنان میں واپسی پر لگی ہوئی ہیں کیونکہ میرے خیال میں وہاں کی تبدیلیاں باقی چین کی طرح ڈرامائی ہوں گی۔ میں صرف وہاں کی تصویریں دیکھ کر ہی یہ کہہ سکتا ہوں۔”

مقامی خصوصیات اور ہائنان میں  حالیہ ترقیوں کو ظاہر کرنے والے بڑے ڈسپلے پینل اور بوتھس بیجنگ میں جمعے کو ہونے والے ایک پروموشن ایونٹ کا حصہ تھے۔ایونٹ نے 500 سے زیادہ افراد کو اپنی جانب متوجہ کیا جن میں پیڈرسن اور 160 سے زیادہ ممالک کے دیگر غیر ملکی سفارت کار شامل تھے۔

ایک دوسرے کی خوبیوں کی بنیاد پر تعاون کی امید کا اظہار کرتے ہوئے پیڈرسن نے کہا کہ “یہ صرف اچھے ساحل، خوبصورت لوگ ہی نہیں بلکہ کئی دلچسپ ترقیات، کئی نئی عمارتیں، صنعتیں، بالخصوص ہائی ٹیک ترقی بھی ہے۔”

ہائنان کی ترقی صرف 30 سال پہلے شروع ہوئی، جب صوبے کو خصوصی اقتصادی زون بنایا گیا تھا۔

گورنر ہائنان صوبائی عوامی حکومت شین سیاؤمنگ نے کہا کہ “اس وقت ہائنان کمزور بنیادی ڈھانچے کے ساتھ نسبتاً پسماندہ علاقہ تھا، اور آپ کو کوئی ٹریفک لائٹ بھی نظر نہیں آسکتی تھی۔”

سابقہ زرعی جزیرہ جدت طرازی اور کشادگی کا راہنما بن چکا ہے۔ سمندری-زمینی-فضائی نقل و حمل کا ایک جال پہلے ہی صوبے کو باقی دنیا سے جوڑنے کے لیے تیار ہو چکا ہے، اور یہ جزیرہ ایشیا کے لیے بواؤ فورم کے سالانہ اجلاس کا گھر بھی ہے۔

شین نے کہا کہ “ہم دنیا   بھرکو اپنا دعوت نامہ بھیجنا  چاہتے ہیں۔ تعطیلات، سرمایہ کاری اور اپنی متنوع ثقافت کا تجربہ اٹھانے کے لیے ہائنان میں خوش آمدید۔”

ذریعہ: عوامی حکومت صوبہ ہائنان

Hawker Pacific Commemorates Ten Years of Support for Embraer Executive Jets

– Hawker Pacific achieved several “world firsts” in its support for Embraer Executive Jets SINGAPORE, Feb. 6, 2018 /PRNewswire/ — Today, at the Singapore Airshow 2018, Hawker Pacific Asia commemorated its 10 years of support for Embraer Executive Jets’ aircraft at a ceremony which was officiated by senior executives from Embraer Executive Jets and Hawker Pacific. […]

Hawker Pacific achieved several “world firsts” in its support for Embraer Executive Jets

SINGAPORE, Feb. 6, 2018 /PRNewswire/ — Today, at the Singapore Airshow 2018, Hawker Pacific Asia commemorated its 10 years of support for Embraer Executive Jets’ aircraft at a ceremony which was officiated by senior executives from Embraer Executive Jets and Hawker Pacific.

Left, Mr Louis Leong, Vice President Asia, Hawker Pacific Asia; Mr Doug Park, Chief Operating Officer Asia Pacific, Hawker Pacific; Mr Johann Bordais, President and CEO Services and Support for Embraer; Mr Michael T. Amalfitano, President and CEO, Embraer Executive Jets

The Hawker Pacific Singapore Service Centre at the Seletar Aerospace Park has been Embraer Executive Jets’ Authorised Service Centre (ASC) in the Asia Pacific region since 2007 and has provided base and heavy maintenance, and AOG support to owners and operators of the full range of Embraer Executive Jets aircraft – Phenom 100, Phenom 300, Legacy 500, Legacy 600, Legacy 650 and Lineage 1000.

In all, over a hundred Embraer Executive Jets aircraft have been supported by Hawker Pacific over the past decade.

Key milestones in Hawker Pacific Asia’s milestones support for Embraer Executive Jets from its facility at Seletar include:

  • First in the world to carry out a Lineage 1000 48-month inspection (2012), 72-month inspection (2014) and 96-month inspection (2016);
  • Collaboration with Embraer in 2008 on a Embraer Legacy 600 Service Bulletin for Installation of Aft Lavatory Smoke Detector;
  • Partnering with Embraer in 2013 to pilot the compliance of Legacy 650 Service Bulletin for GPS Replacement, Iridium, GPS Antenna and LRUs relocation and Filter Installation; and another for replacement of Aft, Wing Tanks, Forward and Ventral Tank Electrical Pumps.

Hawker Pacific Asia’s comprehensive, state-of-the-art facility at the Seletar Aerospace Park is a Federal Aviation Administration (FAA) and European Aviation Safety Agency (EASA) approved maintenance facility. It also holds national aviation authority approvals from over 13 other countries, including the People’s Republic of China and Indonesia.

Hawker Pacific Logo

“Hawker Pacific Asia is immensely proud to be the regional Authorised Service Centre for the entire range of Embraer Executive Jets aircraft, plus in addition we have been recently awarded the Authorised Service Centre for the EMB 135/145 family of commercial jets by Embraer. As the trusted choice for owners and operators of Embraer Executive Jets, we deliver timely, professional support including AOG support, around-the-clock! We are strategically located in an ever-expanding aviation market. This enables Hawker Pacific to be close to our customers. We thank Embraer for appointing us as their aircraft support partner in the region and the trust demonstrated. We look forward to many more good years with Embraer – a highly successful and respected world brand,” said Mr. Louis Leong, Vice President Asia, Hawker Pacific Asia.

In addition to Embraer Executive Jets. Hawker Pacific Asia also supports other major aviation brands including:

  • Authorised Service Centre (ASC) for Embraer Commercial Aviation’s ERJ 135/145 family;
  • Authorised Service Centre (ASC) for Beechcraft, Dassault Falcon Jet, and Daher-Socata aircraft;
  • Authorised dealer and installer for ACSS, Garmin, Honeywell, Rockwell Collins and Universal Avionics avionics products (selected products);
  • Authorised line service centre for Honeywell, Rolls Royce, Pratt & Whitney engines (selected product lines).

Notes to Editor:

Supporting aviation in the region since 1977, Hawker Pacific Asia is located at Singapore’s Seletar Aerospace Park and occupies a 9,400m2 facility that offers world-class services including maintenance, repair and overhaul, retrofits, modification and upgrades, aircraft sales, aircraft management, spares distribution, a dedicated paint shop, plus FBO and aircraft handling services.

For more information, visit www.hawkerpacific.com.

For media enquiries and high-resolution images, please contact:

Ms. Juliet Samraj
Marketing & Customer Experience Manager
Hawker Pacific Asia Pte Ltd
M: +65 9116 8004
E: juliet.samraj@hawkerpacific.com

Photo – https://photos.prnasia.com/prnh/20180206/2048978-1
Logo – https://photos.prnasia.com/prnh/20180131/2045517-1LOGO

YPO to Host World’s Top Business Leaders and Innovators at 2018 YPO EDGE in Singapore

DALLAS, Feb. 06, 2018 (GLOBE NEWSWIRE) — For two days this March, YPO, the global leadership organization for chief executives, will host 2,000 business leaders and innovators from more than 130 countries at the YPO EDGE in Singapore. Each year, YPO EDGE, the largest gathering of CEOs from around the world, brings together thought leaders, […]

DALLAS, Feb. 06, 2018 (GLOBE NEWSWIRE) — For two days this March, YPO, the global leadership organization for chief executives, will host 2,000 business leaders and innovators from more than 130 countries at the YPO EDGE in Singapore.

Each year, YPO EDGE, the largest gathering of CEOs from around the world, brings together thought leaders, creators and visionaries who are providing new perspectives insights, ideas, technologies and innovations.

The guiding theme of the 2018 EDGE in Singapore is Defy Convention, and the agenda is designed to spark idea exchange and redefine the rules in the entrepreneurial spirit of innovation. The EDGE will explore advances in technology, medicine, health, transportation, machine learning, cybersecurity and more, featuring speakers and resources in business, entertainment, technology, health, philanthropy, science and more.

“Singapore is an ideal host city for the YPO EDGE, as the global gateway to the worlds of business, technology and culture,” said Scott Mordell, CEO of YPO. “YPO is thrilled to host its landmark annual event in Singapore, creating opportunities for business leaders to become better leaders and make a significant impact.”

More than 40 internationally renowned speakers will be sharing their inspirational stories and transformational innovations including:

  • Lee Hsien Loong, Prime Minister of Singapore
  • HM Queen Rania Al Abdullah, Queen Consort Hashemite Kingdom of Jordan
  • Billie Jean King, American former World No. 1 professional tennis player
  • Orit Gadiesh, Chairman, Bain and Company
  • Yossi Ghinsberg, Adventurer, Author, Entrepreneur and Humanitarian
  • Amin Toufani, Faculty at Singularity University and CEO of T Labs

Speakers at previous YPO EDGE events include Canadian Prime Minister Justin Trudeau; Sir Richard Branson, founder and chairman of the Virgin Group; Muhtar Kent, chairman and CEO of the Coca-Cola Company; Aung San Suu Kyi, Nobel Peace Prize laureate and general secretary of the National League for Democracy; and Archbishop Desmond Mpilo Tutu, Nobel Peace Prize laureate.

“At the 2018 YPO EDGE in Singapore, YPO business leaders will defy convention and leave with new perspectives, ideas and insights that will empower them to positively impact their businesses, their communities and their lives,” said YPO EDGE Chair N.K, Tong.

About YPO
The premier leadership organization of chief executives in the world.

YPO is the global platform for chief executives to engage, learn and grow. YPO members harness the knowledge, influence and trust of the world’s most influential and innovative business leaders to inspire business, personal, family and community impact.

Today, YPO empowers more than 25,000 members in more than 130 countries, diversified among industries and types of businesses. Altogether, YPO member-run companies employ more than 16 million people and generate USD6 trillion in annual revenues.

Leadership. Learning. Lifelong. For more information, visit ypo.org

Contact:
YPO
Linda Fisk
Office: +1 972 629 7305 (United States)
Mobile: +1 972 207 4298
press@ypo.org

پاکستان تیل و گیس ادارے کے پی او جی سی ایل کی سی آر آئی گروپ کی اینٹی-برائبری سرٹیفکیشن میں شمولیت

تلاش و پیداوار کے ابھرتے ہوئے صوبائی ادارے نے آئی ایس او 37001:2016 اے بی ایم ایس اسٹینڈرڈ کے لیے دستخظ کردیے لندن، 5 فروری 2018ء/پی آرنیوزوائر/– کارپوریٹ ریسرچ اینڈ انویسٹی گیشنز پرائیوٹ لمیٹڈ (سی آر آئی گروپ) نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان میں تیل و گیس کی پیداوار کا ادارہ کے پی او […]

تلاش و پیداوار کے ابھرتے ہوئے صوبائی ادارے نے آئی ایس او 37001:2016 اے بی ایم ایس اسٹینڈرڈ کے لیے دستخظ کردیے

لندن، 5 فروری 2018ء/پی آرنیوزوائر/– کارپوریٹ ریسرچ اینڈ انویسٹی گیشنز پرائیوٹ لمیٹڈ (سی آر آئی گروپ) نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان میں تیل و گیس کی پیداوار کا ادارہ کے پی او جی سی ایل آئی ایس او 37001 اینٹی-برائبری مینجمنٹ سسٹم اسٹینڈر سند حاصل کرنے کے لیے اس کی سی آر آئی سرٹیفکیشن سروسز میں شامل ہو چکا ہے۔https://prnewswire2-a.akamaihd.net/p/1893751/sp/189375100/thumbnail/entry_id/0_2as0f0d4/def_height/400/def_width/400/version/100012/type/1

https://mma.prnewswire.com/media/431851/Corporate_Research_and_Investigations_Logo.jpg

لندن میں قائم سی آر آئی گروپ دیانت میں مطلوبہ احتیاط، ملازمت میں پس منظر کی جانچ، تھرڈ پارٹی خطرے کے انتظام اور تکمیل اور دیگر پیشہ ورانہ تفتیشی تحقیقی خدمات پیش کرنے والا عالمی ادارہ ہے۔ 2016ء میں ادارے نے 3پی آر ایم-سرٹیفائیڈ اور 3پی آر ایم-کوالیفائیڈ سمیت پروگراموں میں سی آر آئی سرٹیفکیشن اور ماہرین کی تربیت فراہم کرنے کے لیے اپنا اینٹی-برائبری اینڈ اینٹی کرپشن سینٹر فار ایکسی لینس (ABAC®CoE) جاری کیا۔

کے پی او جی سی ایل خیبر پختونخوا پاکستان میں صوبائی ہولڈنگ کمپنی ہے جو 2013ء میں قائم کی گئی تھی تاکہ صوبے میں مقامی وسائل کی دریافت کرکے خیبر پختونخوا کو خود کفیل  بنائے۔ رضی الدین رضی، سی ای او کے پی او جی سی ایل، نے کہا کہ آئی ایس او 37001:2016 اے بی ایم ایس سرٹیفکیشن میں شمولیت ادارے کو “اپنے شراکت داروں اور حصص یافتگان کو مکمل اعتماد” فراہم کرنے میں مدد دے گی، دوسرے معنوں میں حکومت خیبر پختونخوا، پاکستان کو”۔

رضی نے کہا کہ کے پی او جی سی ایل “عوام کی سہولت اور اپنے حصص یافتگان کے لیے کارآمد خفیہ خزانوں کی مسلسل تلاش میں ہے۔ اس نے بین الاقوامی اور قومی اداروں کے لیے سرمایہ کاری کے نئے در وا کیے ہیں کیونکہ یہ ایک با اختیار اور راست گو ادارے کی حیثیت سے کاروباری برادری میں بہت اچھی ساکھ رکھتا ہے۔”

“کے پی او جی سی ایل کے بذریعہ کراچی اسٹاک ایکسچینج اور اے آئی ایم لندن اسٹاک ایکسچینج تک کے سفر کو آئی ایس او 37001 جیسے سنگ ہائے میل کی ضرورت ہوگی۔” رضی نے کہا۔ “سرمایہ کار اور کاروباری شراکت دار ہماری اہلیت اور فوقیت پر مکمل بھروسہ کر سکتے ہیں اور آئی ایس او 37001 ہماری ان خصوصیات کی تصدیق کرے گا۔”

آئی ایس او 37001:2016 سرٹیفکیشن

حال ہی میں قائم کردہ آئی ایس او 37001 معیار عالمی ادارے کو انسداد رشوت ستانی کے انتظام کا نظام لاگو کرنے میں مدد دینے کے لیے تیار کیا گیا ہے۔ یہ معیار مختلف اقدامات کے سلسلے کی صراحت کرتا ہے جو کسی ادارے کو رشوت ستانی سے تحفظ، سراغ اور نمٹنے کے لیے درکار ہوتے ہیں اور اس کے نفاذ کے لیے متعلقہ رہنمائی فراہم کرتا ہے۔

ظفر انجم، گروپ چیف ایگزیکٹو آفیسر سی آر آئی گروپ نے کہا کہ آئی ایس او 37001:2016 سرٹیفکیشن داخلی انسداد رشوت ستانی و انسداد بدعنوانی نظاموں کے قیام، نفاذ، برقرار رکھنے اور بہتر بنانے میں مدد کے لیے تیار کی گئی ہے۔

“ہماری نظریں کے پی او جی سی ایل کے ساتھ کام کرنے اور اسے اپنے اہداف کے حصول اور اخلاقی اداروں کی اعلیٰ ترین سطح پر تسلیم کیے جانے میں مدد دینے پر مرکوز ہیں۔” انجم نے کہا۔ “یہ بہت اہم ہے کہ آئی ایس او 37001:2016 معیارات دنیا بھر میں 160 سے زیادہ ممالک میں تسلیم اور استعمال کیے جاتے ہیں۔”

سی آر آئی سرٹیفکیشن کے پڑتال گر اور تجزیہ کار اقدامات اٹھاتے ہیں جو موجودہ انتظامی عمل اور اختیارات کے ساتھ مکمل ہوتے ہیں، اور ان میں شامل ہیں:

  • ایک انسداد رشوت ستانی پالیسی تسلیم کرنا
  • انتظامیہ کی جانب سے خریداری اور قیادت کا استحکام
  • تکمیل احکامات کی نگرانی کے ذمہ دار افراد کی تربیت
  • تمام اہلکاروں اور کاروباری ساتھیوں کو پالیسی اور پروگرام کی ترسیل
  • رشوت ستانی اور بدعنوانی کے خطرے کے تعین کی فراہمی
  • منصوبوں ، کاروباری ساتھیوں اور دیگر ملحقہ تیسرے فریقوں کو مطلوبہ احتیاط میں رہنمائی دینا
  • مالیاتی و تجارتی ضابطوں کا نفاذ
  • خبر گیری اور تفتیش کے عمل کی تیاری

“رشوت ستانی مقامی مارکیٹوں اور عالمی کاروباری سرگرمیوں دونوں میں ایک کلیدی مسئلہ ہے،” انجم نے کہا۔ “کاروباری عمل کو پھیلانے اور تجارتی فوائد کو زیادہ سے زیادہ کرنے کی خواہش کو نہ صرف کام کے دوران خطرات کو شناخت کرنے اور سنبھالنے کی بلکہ رشوت ستانی کے خطروں کا کھوج لگانے اور اسے کم کرنے کی بھی ضرورت ہوتی ہے۔ دنیا کی گورننگ اداروں کے بدعنوانی، رشوت ستانی وار دیگر غیر اخلاقی کاروباری حرکات سے تحفظ کے لیے زیادہ سخت معیارات اور کوششوں کی جانب جھکاؤ کے ساتھ ہم اداروں کو ان معیارات تک پہنچنے اور پورا اترنے میں مدد دینے کے لیے تیار ہیں۔”

سی آر آئی گروپ کے بارے میں

گزشتہ 28 سالوں میں سی آر آئی گروپ ادارہ جاتی تفتیش اور خطرات سے نمٹنے میں ایک عالمی رہنما کی حیثیت سے ابھرا، جو یورپ، ایشیا بحر الکاہل، جنوبی ایشیا، مشرق وسطیٰ، شمالی افریقہ، شمالی و جنوبی امریکا میں نامور صارفین کے لیے خدمات دے رہا ہے۔ سی آر آئی گروپ قانونی تکمیل، مالیاتی نتیجہ خیزی اور بیرونی شراکت داروں، رسد کنندگان اور کسی انجمن سے منسلک ہونے کے خواہشمند صارفین کے لیے تکمیل کے درجات  قائم کرکے کاروباروں کو تحفظ دیتا ہے۔

اینٹی-برائبری اینڈ اینٹی-کرپشن سینٹر آف ایکسی لینس سی آر آئی گروپ کے ایک آزاد شعبے کی حیثیت سے قائم کیا گیا تھا تاکہ انسداد بدعنوانی، مطلوبہ احتیاط کے عمل اور عالمی تیسرے فریق سے تعلق کی پیروی اور برقرار رکھنے کے لیے ضروری عوامل کے بہترین جدید اقدامات کو تعمیر کرکے تکمیل احکام کے موجودہ ڈھانچوں کی توثیق یا انہیں پھیلانے کے خواہشمند اداروں کو تربیت و استناد فراہم کر ے۔

رابطہ سی آر آئی گروپ

ظفر انجم، ایم ایس سی، ایم ایس، سی ایف ای، سی آئی آئي، ایم آئی سی اے، انٹرنیشنل ڈپلوما (فائنانشل کرائم)

گروپ چیف ایگزیکٹو آفیسر

کارپوریٹ ریسرچ اینڈ انوسٹی گیشنز ایل ایل سی

917-918، لبرٹی ہاؤس، ڈی آئی ایف سی

دبئی، متحدہ عرب امارات
دفتر: 3589884 4 971+
سیل: 9038184 50 971+
ای میل: zanjum@CRIGroup.com

لوگو –https://mma.prnewswire.com/media/431851/Corporate_Research_and_Investigations_Logo.jpg